موانع تکفیر اور فقہاے اہل سنت: ایک تجزیاتی مطالعہ

The Criteria of Takfir in Sunni Legal Discourse: An Analytical Study of Obstacles to and Conditions of Takfir

  • Mubasher Hussain Associate Professor, Sheikh Zayed Islamic Centre, University of the Punjab
Keywords: Takfir, disbelief, apostasy, Sunni Legal Discourse

Abstract

Takfir—to declare a Muslim a kafir or murtadd i.e., an apostate or unbeliever—is considered as a highly sensitive issue in the Islamic legal and theological discourse for its dangerous consequences and, therefore, the Prophet Muhammad (peace be on him) warned of accusing a fellow Muslim of kufr (i.e. denial/disbelief or apostasy). The last few decades have surprisingly witnessed an increase in trends of takfir across the globe. The mainstream sunni jurists are of the view that a Muslim becomes an unbeliever/apostate if he denies—verbally or by an action—a fundamental principle of Islamic belief, but they have also identified certain obstacles and conditions necessary to be observed before declaring a Muslim fellow a kafir (apostate or a non-Muslim). This paper attempts to elaborate the said conditions of and obstacles to takfir, relying upon the sunni fiqh genre.  The conclusion reached by the author is that takfir has nothing to do with a Muslim when one of the following four major obstacles to takfir is present: ikrah (fear of death), khata (a genuine mistake without intention), jahl (lack of knowledge or unawareness) and tawil (an interpretation, whether or not literal, analogical, allegorical/esoteric, symbolic or mystical, of the divine text, which may sometimes lead to an unpopular or the least possible conclusion).

References

الحدید، 57: 20

Al-Ḥadīd, 57:20.

القصص، 28: 48۔

Al-Qaṣaṣ,28: 48.

حسين بن محمد، المفردات (لبنان: دار المعرفہ، س ن)، ۴۳۴۔

H̱ūsāyn bin Mūḥammad, āl mafrdāt (labnān: dār āl maʿrifaẗ, nd), 434

محمد الخصکفی، الدر المختار (بیروت: دار الفکر ، طبع 1386)، 4: 223۔

Mūḥammad āl Ḥaskafy, āl dūr āl Mūẖtār (berūwt: dār āl fikr,1386), 4/223

محمد امین، ابن عابدین ، رد المحتار (بیروت: دار الفکر للطباعۃ والنشر، طبع 2000)، ۴ : ۲۲۲ تا ۲۳۰

Ibn e Āabdyn, Mūḥammad Āmin, Rad āl Mūḥtār (berwt: dār āl Filr, 2000), 4/222-230

محمد بن اسماعیل البخاری، الجامع الصحیح (ریاض: دار السلام، 1998)، کتاب الادب، باب من کفر اخاہ، حدیث، ۶۱۰۵۔

Mūḥammad bin Ismāʿyl āl būẖāri, āl Ǧāmiʿ āl ṣaḥiḥ (Riāḍ: dār āl Salām, 1998), Kitāb āl ādab, bāb man kafar āẖāhū, 6105

محمد بن اسماعیل البخاری، الجامع الصحیح ، کتاب الادب، باب ما ینھی من السباب واللعن، حدیث۶۰۴۵۔

Mūḥammad bin Ismāʿyl āl būẖāri, āl Ǧāmiʿ āl ṣaḥiḥ, Kitāb āl ādab, bāb mā Yānhāh min āl sabābi wa āl laʿn, 6045

محمد بن اسماعیل البخاری، الجامع الصحیح ، کتاب الادب، باب من کفر اخاہ، ح 6104۔

Mūḥammad bin Ismāʿyl āl būẖāri, āl Ǧāmiʿ āl ṣaḥiḥ, Kitāb āl ādab, bāb man kafar āẖāhū, 6104

سلیمان بن اشعث سجستانی ، ا بوداؤد ، السنن (ریاض: دار السلام، طبع 1999)، کتاب الادب، باب فی النھی عن البغی۔

Sūlaimān bin āšʿaṯ Saǧastāni, āl Maʿrūwf ba abw dāwٔūwd, āl Sūnan (Riāḍ: dār āl salām, 1999), Kitāb āl ādab, bāb fi āl nahi ʿan āl baġā.

یوسف بن عبد اللہ ، ابن عبد البر، التمہید (قاھرہ: مؤسسۃ القرطبہ، طبع 1406)،ج17، ص 21۔

Yūwsūf bin ʿabdūllah, Ibn e ʿabd āl bar, āl Tamhiyed (Cairo: Muwsisah āl Qarṭba,1406), 17/21

ابراہیم بن موسیٰ شاطبی ، الموافقات (قاھرہ: دار ابن عفان، طبع 1997)، ج۲، ص۲۷۱، ۲۷۲۔

Ibrāhiym bin Mūwsā āl Šāṭbi, āl Mawāfqāt (Cairo: dār ibn e ʿafān,1997), 2/272, 273

النساء: ۹۴

āl Nisāʾ: 94

محمد بن اسماعیل البخاری، الجامع الصحیح ، کتاب التفسیر، تفسیر سورۃ النساء۔

Mūḥammad bin Ismāʿyl āl būẖāri, āl Ǧāmiʿ āl ṣaḥiḥ, Kitāb āl Tafsir, Tafsir Sūwraẗ āl Nisāʾ

مسلم بن حجاج القشیری، الجامع الصحیح(ریاض: دار السلام، طبع 1997)، کتاب الایمان، باب تحریم قتل الکافر بعد قولہ لا الٰہ الا اللہ۔

Mūslim bin Ḥaǧāǧ, āl Ǧāmiʿ āl Ṣaḥiḥ (Riāḍ: dār āl Salām,1997), Kitāb āl Iymān, bāb Taḥriym qatl e āl Kāfr baʿd qawlūhū lā ilaha illallah

محمد بن اسماعیل البخاری، الجامع الصحیح، کتاب الدیات، باب قولہ: ومن یقتل مومنا متعمدا

Mūḥammad bin Ismāʿyl āl būẖāri, āl Ǧāmiʿ āl ṣaḥiḥ, Kitāb āl diyāt, bāb qawlūhū: wa man Yqtūl mūwminā Mūtʿamidā

احمد بن شعیب ،نسائی، السنن(ریاض: دار السلام، طبع 1999)، کتاب الایمان، باب صفۃ المسلم۔

Āḥmād bیn Šūʿaib, Nasāi, āl Sūnan (Riāḍ: dār āl Salām,1999), Kitāb āl iymān, bāb Sūfaẗ āl Mūslim۔

محمد بن اسماعیل البخاری، الجامع الصحیح ، کتاب الایمان، باب فان تابوا ، حدیث ۲۵۔

Mūḥammad bin Ismāʿyl āl būẖāri, āl Ǧāmiʿ āl, Kitāb āl iymān, bāb fā in tābūw, 25

اگرچہ اس مسئلہ میں اہل علم کی یہ رائے ہے کہ ایمانیات (اصول) میں ان موانع کو بطور عذر قبول نہیں کیا جا سکتا، البتہ فروع (فقہ وغیرہ) میں یہ عذر قابل قبول ہے، لیکن جمہور علماے اہل سنت نے عقائد اور فقہی احکام یعنی اصول و فروع دونوں میں ان موانع کے عذر ہونے کا اصولاً اعتبار کیا ہے، تاہم تفصیلات میں اختلاف راے پایا جاتا ہے ۔

علماے اہل سنت نے بالعموم ارتداد (رِدّۃ) اور اھلیت (عوارض الأھلیۃ) کی بحث میں مختلف موانع/اعذار پر بات کی ہے جن میں سے مذکورہ بالا چار اہم اور بنیادی نوعیت کے موانع کی تفصیلات یہاں دی جا رہی ہیں، اگرچہ ان چار موانع کے علاوہ کچھ اور موانع بھی اس سلسلہ میں فقہ کی کتابوں میں زیر بحث آے ہیں، مثلاً اگر کویی مسلمان مرتد ہو جاے تو اس کے ارتداد کا حکم لگانے سے پہلے یہ بھی دیکھا جاے گا کہ وہ بالغ اور عاقل ہو، ورنہ اس پر ارتداد کے احکام جمہور فقہا کے نزدیک عاید نہیں ہوں گے، مثلاً دیکھیے: ابو بکر بن مسعود، کاسانی، البدائع و الصنائع ( بیروت: دار الکتاب العربی، ۱۹۸۲)، ج۷، ص۱۳۴۔

Ābūw Bakr bin Masʿūwd, Kāsāny, Badiʿ āl Saniʿ (Berūwt: Dār āl Kitāb āl ʿArabi, 1982), 7/134

احمد حموی حنفی، غمز عیون البصائر (بیروت، دار الکتب العلمیۃ، 1985)، ج2، ص 139

Āhmad Ḥamawy, Ḥanafi, Ġamz ʿūwūn āl Bṣāir (Berūwt: Dār āl Kitāb ālʿlmiyyẗ,1985), 2/139

الاسراء: ۱۵

Āl āsrāʾ: 15

ابراہیم بن موسی، شاطبی ، الموافقات (بیروت: دار ابن عفان، 1997ء) ، ج1، ص4

Ibrāhym bin Mūwwsā, Šāṭbi, Āl Mawāfqāt (berūwt: Dār ibn eʿafān, 1997), 1/4

محمد بن بہادر زركشي، المنثور فی القواعد (کویت: وزارت الاوقاف والشئوون الاسلامیۃ، طبع ، 1405)، ج۲، ص ۱۳

Mūḥammad bin Bahādūr Zarkašy, āl Manṯūwr fi āl qawāʿid (Kuwait: Wazārat āl Āwqāf wa āl šūwwn āl islāmiyyaẗ, 1405), 2/13

محمد بن اسماعیل البخاری، الجامع الصحیح ، کتاب احادیث الانبیاء،حدیث۳۴۷۸

Mūḥammad bin Ismāʿil āl Bẖāri, āl Ǧāmʿ āl Saḥiḥ, Kitāb āl Ānbiyaʾ, Hadith 3478

محمد بن اسماعیل البخاری، الجامع الصحیح ، کتاب احادیث الانبیا ،حدیث۳۴۷۸

Mūḥammad bin Ismāʿil āl Bẖāri, āl Ǧāmʿ āl Saḥiḥ, Kitāb āl Ānbiyaʾ, Hadith 3478

احمد،ابن تیمیہ، مجموع الفتاوی (مدینہ: مجمع فھد، طبع 1995)، ج۱۱، ص۴۰۹، ۴۱۰۔

Āḥmad ibn ʿabdūl Ḥaliym, Ibn e Taimiyyaẗ, Maǧmūwʿ āl Fatāwā (Madinaẗ: Majmaʿ āl Fahad, 1995), 11/409.410

ابن عبد البر،التمہید (بیروت : دار الکتاب العربی، 1985ء) ، ج۱۸، ص۴۶۔

Ibn ʿabdūl Bar. āl Tamhiyd (Beirūt: Dār āl Kitāb ālʿarabi, 1985), 18/46

محمد بن ابی بکر ، ابن قیم، مدارج السالکین ( بیروت، دار الکتاب العربی، طبع 1973)، ج۱، ص۳۳۸۔

Mūḥammad bin Ābi Bakr, ibn e Qayyam, Madāriǧ āl Sālikiyn (Berūwt: Dār āl Kitāb ālʿarbi, 1973), 1/338

عبد اللہ بن مسلم، ابن قتیبہ ، تاویل مختلف الحدیث(بیروت، مکتب اسلامی، طبع 1999)، ص۱۳۶۔

ʿĀbdūllāh, bin Mūslim, ibn e Qūtaybaẗ, Tāwiyl Mūẖtalaf āl Ḥadiṯ (Berūwt: Maktab Islām, 1999), 134

محمد بن یزید ، ابن ماجہ، السنن (ریاض: دار السلام، طبع 2002)، کتاب الفتن، حدیث ۴۰۴۹

Mūḥammad bin Yaziyd, ibn e Māǧaẗ, āl Sūnan (Riāḍ: Dār āl Slām, 2002), Kitāb āl Fitan, Hadith 4049

ابن تیمیہ،مجموع الفتاویٰ، ج۱۱، ص۴۰۷۔

Ibn e Taymiyyaẗ, Mǧmūwʿ āl Fatāwā, 11/407

عبد اللہ بن احمد، اثبات صفۃ العلو، ( کویت، الدار السلفیہ، طبع 1406)، ص۱۲۴۔

ʿabdūllah bin Āḥmad, Iṯbāt Ṣifẗ ālʿūlūw (Berūwt: āl Dār āl Salfiyaẗ, 1406), 124

محمد جمال الدین قاسمی، محاسن التاویل (بیروت: دار الکتب العلمیہ، طبع 1418) ، ج۵، ص۱۳۰۷۔

Mūḥammad Ǧamāl āl diyn Qāsmi, Maḥāsin āl Tāwiyl (Berūwt: Dār āl Kūtūb ālʿalmiyyah, 1418), 5/1307

علی ابن احمد ابن حزم اندلسی،الاحکام (قاھرہ: دار الحدیث، طبع 1404)، ج۱، ص۱۳۳۔

ʿAli ibn e Āḥmad, ibn e Ḥazam, āl Āḥkām (Cairo: dār āl Ḥdiṯ, 1404), 1/133

یحییٰ بن شرف النووی، المنہاج (بیروت: احیا ء التراث ، طبع 1392)،ج۱ص۱۲۸۔

Yahya bin Šarf, āl Nawawi, āl Minhāǧ (Berūwt: Dār Āḥyāʾ āl Tūraṯ, 1392), 1/128

ابن تیمیہ،مجموع الفتاوی ، ج28، ص501

Ibn e Taymiyyaẗ, Mǧmūwʿ āl Fatāwā, 28/501

محمد بن علی الشوکانی، نیل الاوطار (قاھرہ: دار الحدیث، س ن)، ج6، ص 234۔

Mūḥammad bin ʿAli, āl Šūwkāni, Nail āl Āwṭār (Cairo: Dār āl Ḥdith, nd), 6/234

محمد ابن مکرم افریقی، لسان العرب (بیروت: دار صادر، س ن )، مادہ، خطا۔

Mūhammad bin Mkarram, āfriqi, Lisān āl ʿarab (Berūwt: Dār Sādir, nd), “H̱ Ṭ ʾ”

مسعود بن عمر تفتازانی ، شرح التلویح علی التوضیح ( بیروت، دار الکتب العلمیہ،1996)، ج2، ص 411۔

Masʿūwd bin ʿūmar, Taftāzāni, Šarḥ āl Talwiyḥ āl āl Tawḍiḥ (Berūwt: Dār āl Kitab ālʿalamiyyaẗ,1996), 2/411

الموسوعۃ الفقہیۃ، بذیل مادہ: الخطا، ج۱۹، ص ۱۳۰۔

āl Mūwsūwʿẗ āl Fiqhiyyaẗ, “H̱ Ṭ ʾ”, 19/130

محمد بن احمد ، قرطبی، الجامع لأحکام القرآن (دمشق: مکتبہ الغزالی، س ن)، ج ۳، ص ۴۳۱۔

Mūḥammad bin Āḥmad, Qūrṭūbi, āl Ǧāmiʿ li Āḥkām āl Qūrāٓn (Damašq: Maktabaẗ āl Ġazāli, nd), 3/431

الأحزاب:۵

āl āĀḥzāb:5

محمد بن اسماعیل البخاری، الجامع الصحیح ، کتاب المناقب، باب نسبۃ الیمن الی اسماعیل ؑ۔

Mūḥammad bin ismāʿil, Būẖāri, āl Ǧāmiʿ āl Ṣaḥiḥ, Kitāb āl Manāqib, Bāb Nisbaẗ āl Yaman ilā ismāʿil

احمد ابن علی ابن حجر، فتح الباری (لاہور: دار النشر ، طبع اول، س ن)، ج۱۱، ص۵۵۱۔

Āḥmad ibn ʿAli, ibn e Ḥaǧar, Fatḥ āl Bāri (Lahore: dār āl Našar, nd), 11/551

نساء: 92، 93

Nisāʾ: 92، 93

محمد بن یزید، ا بن ماجہ، السنن، کتاب الطلاق، باب طلاق المکرہ ،، حدیث 2045۔

Mūḥammad bin Yaziyd, ibn e Māǧaẗ, āl Sūnan, Kitāb āl Talāq, Bāb āl Talāq āl Makrūwh, Hadith 2045

عبد الرحمن بن احمد، ابن رجبؒ، جامع العلوم و الحکم (بیروت: دار المعرفہ، ۱۴۰۸ھ)، ص۳۷۴، ۳۷۶۔

ʿAbd āl Raḥman bin Āḥmad, ibn e Raǧab, Ǧāmiʿ ālʿūlūwm wa āl Ḥūkam (Berūwt: Dār āl Maʿrifaẗ, 1408 A.H), 374,673

محمد بن اسماعیل البخاری، الجامع الصحیح ، کتاب الاعتصام بالکتاب والسنۃ، باب اجر الحاکم اذا اجتہد۔

Mūḥammad bin ismāʿil, Būẖāri, āl Ǧāmiʿ āl Ṣaḥiḥ, Kitāb āl iʿtiṣām bil Kitāb wa āl Sūnnaẗ, Bāb Āǧr āl Ḥākim iḏā iǧtahada

ابن تیمیہ، مجموع الفتاویٰ، ج۱۲، ص۱۸۰، ص۴۶۶، ۵۲۳، ۵۲۴۔

Ibn e Taymiyyaẗ, Mǧmūwʿ āl Fatāwā, 12/180, 466, 523, 524

ابن منظور، لسان العرب ، بذیل مادہ، کرہ۔

ibn e Manẓūwr, Lisān āl ʿarab, “K R H”

ابو بکر بن مسعود کا سانی، البدائع الصنائع (بیروت: دار اکتب العلمیہ، 1986ء) ، ج7، ص 170

Ābūw Bakr bin Masʿūwd, Kāsāny, Badiʿ āl Saniʿ (Berūwt: Dār āl Kitāb āl ʿArabi, 1982), 7/170

محمدبن سعد، کتاب الطبقات الکبیر (بیروت: دار صادر، س ن)، ج۳، ص ۲۱۹

Mūḥammad bin Saʿd, āl Tabaqāt āl Kūbrā (Berūwt: Dār āl Sādir, nd), 3/219

احمد بن علی ، جصاص، احکام القرآن (بیروت: دار احیا ء التراث العربی، طبع 1405)، ج۳ص۱۱۸۰۔

Āḥmad bin ʿAli, Ǧaṣāṣ, Āḥkām āl Qūrʾān (Berūwt: Dār Āḥyaʾ āl Tūraṯ,1405), 3/1180

احمد بن علی ، ابن حجر، فتح الباری (لاہور: دار النشر، س ن)، ج12، ص 314۔

Āḥmad ibn ʿAli, ibn e Ḥaǧar, Fatḥ āl Bāri (Lahore: dār āl Našar, nd), 12/314

محمد بن عبد اللہ، ابن العربی، تفسیر احکام القرآن (مصر: مطبعہ عیسی البابی الحلبی، س ن)، ج۳ص۱۱۷۸۔

Mūhammad bin ʿAbdūllah, ibn āl ʿArabi, Tafsir Āḥkām āl Qūrʾān (Egypt: Matbaʾah ʿisā āl Bābi āl Ḥalbi, nd), 3/1178

احمد بن علی ، ابن حجر، فتح الباری (بیروت: دار صادر، س ن)، ج۱۲، ص۳۱۷۔

Āḥmad ibn ʿAli, ibn e Ḥaǧar, Fatḥ āl Bāri (Berūwt: Dār āl Sādir, nd), 12/317

اسماعیل ابن عمر ابن کثیر، تفسیر القرآن العظیم (مدینہ: دار طیبہ، طبع 1999)، ج4، ص 606۔

ismāʿil bin ʿūmar, ibn e Kaṯir, Tafsir āl qūrʾān ālʿaẓiym (Madina: Dār Tayyibah, 1999), 4/606

محمد بن اسماعیل البخاری، الجامع الصحیح ، کتاب الاکراہ، باب من اختار الضرب والقتل والھوان علی الکفر، ح۶۹۴۳۔

Mūḥammad bin ismāʿil, Būẖāri, āl Ǧāmiʿ āl Ṣaḥiḥ, Kitāb āl ikrāh, Bāb man iẖtār āl ḍarb wāl Qatl wāl Hawān ʿAlā āl Kūfr, Hadith 6943

محمد بن یوسف ، ابو حیان، تفسیر البحر المحیط (بیروت: دار الکتب العلمیہ، طبع 2001)، ج2، ص 443۔

Mūḥammad bin Yūwsūf, Ābūw Ḥayyān, āl Baḥr āl Mūḥiyṭ (Berūwt: Dār āl Kūtūb āl ʿalamiyyah, 2001), 2/443

احمد بن علی ، ابن حجر، فتح الباری ، ج۱۲، ص۳۱۲۔

Āḥmad ibn ʿAli, ibn e Ḥaǧar, Fatḥ āl Bāri,12/312

ابن منظور افریقی، لسان العرب، بذیل مادہ، " فسر " و " أول "۔

ibn e Manẓūwr, Lisān āl ʿarab, “A W L”

ابن تیمیہ، مجموع الفتاوی، ج۱۳، ص ۲۷۰تا ۳۱۳۔

Ibn e Taymiyyaẗ, Mǧmūwʿ āl Fatāwā, 13/270,313

محمد بن ابراہیم ، صنعانی (بیروت: دار الکتب العلمیۃ، طبع ۱۹۸۷)، ص 377۔

Mūḥammad bin ibrāhim, āl Sūnʿāni (Berūwt: Dār āl Kūtūb āl ʿalamiyyah, 1987), 377

احمد بن علی ، ابن حجر، فتح الباری ، ج12، ص 3۔

Āḥmad ibn ʿAli, ibn e Ḥaǧar, Fatḥ āl Bāri,12/3

محمد امین بن عمر، ابن عابدین، رد المحتار (بیروت: دارالفکر، 1992ء)، ج۴، ص۲۲۴۔

Ibn e Āabdyn, Mūḥammad Āmin, Rad āl Mūḥtār (berwt: dār āl Fikr, 2000), 4/224

محمد بن ادریس الشافعی، الام (بیروت: دار المعرفہ، 1393)، ج۶، ص۲۰۵۔

Mūḥammad bin idrees, āl Šāfʿi, āl ūm (Berūwt: Dār āl Maʿrifaẗ, 1393 A.H), 6/205

ابن تیمیہ،مجموع الفتاویٰ، ج۲۰، ص۲۶۳، ۲۶۸۔

Ibn e Taymiyyaẗ, Mǧmūwʿ āl Fatāwā, 20/263, 268

ابن قیم،مدارج السالکین (بیروت: دار الکتاب العربی، 1973 ء)، ج۱، ص۳۶۷۔

Mūḥammad bin Ābi Bakr, ibn e Qayyam, Madāriǧ āl Sālikiyn (Berūwt: Dār āl Kitāb ālʿarbi, 1973), 1/367

ابن تیمیہ،مجموع الفتاوی، ج۳، ص۳۵۱۔

Ibn e Taymiyyaẗ, Mǧmūwʿ āl Fatāwā, 3/351

ابن تیمیہ،مجموع الفتاویٰ، ج۷، ص۵۰۷، ۵۰۸۔

Ibn e Taymiyyaẗ, Mǧmūwʿ āl Fatāwā, 7/507,508

احمد بن عبد الحلیم بن تیمیہ،منھاج السنۃ (قاھرہ: مؤسسۃ قرطبہ، طبع اول، 1406)، ج۵، ص163۔

Āḥmad bin ʿAbdūl Ḥaleel, ibn e Taimiyyah, Minhāj āl Sūnnaẗ (Cairo: Mūwsisaẗ āl Qartabah, 1406), 5/163

احمد بن عبد الحلیم بن تیمیہ،منھاج السنۃ ،ج۵، ص۲۴۱۔

Āḥmad bin ʿAbdūl Ḥaleel, ibn e Taimiyyah, Minhāj āl Sūnnaẗ , 5/163

ابن تیمیہ،مجموع الفتاوی، ج۷، ص۲۱۸۔

Ibn e Taymiyyaẗ, Mǧmūwʿ āl Fatāwā, 7/218

ابن تیمیہ،مجموع الفتاویٰ، ج۱۷، ص۴۴۸۔

Ibn e Taymiyyaẗ, Mǧmūwʿ āl Fatāwā, 17/448

Published
2022-12-31
How to Cite
Mubasher Hussain. (2022). موانع تکفیر اور فقہاے اہل سنت: ایک تجزیاتی مطالعہ . Al Qalam, 27(2), 301-326. https://doi.org/10.51506/al qalam.v27i2.1788